امریکی شہری کی بہبود

اگر آپ ہندوستان میں کسی امریکی دوست یا رکن خاندان کی بہبود کے تئیں فکر مند ہیں، یا کسی ناگہانی حالت میں ان سے رابطہ کرنے کی ضرورت محسوس کرتے ہیں تو سفارت خانہ آپ کی مدد کر سکتا ہے۔ مزید معلومات

اگر آپ چاہتے ہیں کہ سفارتخانہ ہندوستان میں کسی امریکی شہری کی بہبود یا اُسکا اتہ پتہ معلوم کرے تو براہ مہربانی سفارت خانہ سے 8000-2419 پر رابطہ کریں۔ اگر آپ امریکہ سے فون کر رہے ہیں تو پہلے 11۔91۔011 ڈائل کریں یا acsnd@state.gov پر ای میل کریں-

بیرون ملک امریکی شہریوں کیلئے مختلف ہنگامی خدمات کی عام معلومات یہاں دستیاب ہیں۔

ہم بیرون ملک تمام امریکی شہریوں کی پُر زور حوصلہ افزائی کرتے ہیں وہ سیکورٹی اپ ڈیٹس اور سفر کی معلومات کے لئے اپنا نام درج کرائیں۔ یہ ایک مفت سروس ہے جو آپ کو ہنگامی حالات سے آگاہ رکھتی ہے۔ یہاں سائن اپ کریں۔

عموماً پوچھے جانے والے سوالات؟

کیا سفارتخانہ ہندوستان میں میرے امریکی دوست یا رکن خاندان کی موت کی تصدیق کر سکتا ہے؟

بعض صورتوں میں ہم ہندوستان میں مقیم امریکی شہری کی موت کی تصدیق کر سکتے ہیں، اگر ہمیں ایسا کرنے کا اختیار دیا گیا ہو۔ تاہم بیرون ملک مقیم امریکی شہری پرائیویسی ایکٹ کے دائرے میں آتے ہیں جس کے تحت ہم ان کے بارے میں کوئی جانکاری دینے سے قاصر ہوتے ہیں تا وقتیکہ وہ ہمیں اسکی اجازت دیں۔ ہم آپ کو معلومات کیلئے ارکان خاندان یا متعلقہ شخص کے آجر سے رابطہ کرنے کا مشورہ دیتے ہیں۔ تا ہم اگر آپ کے پاس کسی امریکی شہری کی موت کے بارے میں مخصوص جانکاری ہو اور آپ سمجھتے ہوں کہ ہم اُس سے واقف نہیں ہوں گے تو براہ مہربانی ہمیں اسکے بارے میں جتنا زیادہ ہو سکے معلومات فراہم کریں تاکہ ہم اسکی تفتیش کر سکیں-

مجھے گزشتہ کئی ماہ سے اپنے بیٹا/بیٹی/والد/والدہ کی کوئی خبر نہیں مل رہی ہے، کیا ان کو تلاش کرنے میں اے۔ سی۔ ایس میری مدد کر سکتا ہے؟ براہ مہربانی اپنے  بیٹا/بیٹی/والد/والدہ کے بارے میں مزید معلومات فراہم کرائیں جیسے پورا نام، تاریخ پیدائش، جائے پیدائش، ای میل ایڈریس، گھر کا پتہ، موبائل نمبر وغیرہ، تاکہ تلاش کرنے میں مدد مل سکے۔ برائے مہربانی درج ذیل باتیں ذہن نشیں رکھیں:
(1)  *پرائیویسی کے قوانین ہمیں کسی فرد کے بارے میں معلومات اس کی اجازت کے بغیر کسی اور کو  دینے سے  روکتے ہیں۔
(2)  ہمیں جس شخص کی تلاش ہے اس کے بارے میںممکنہ حد تک زیادہ سے زیادہ معلومات رکھنا بہت معاون ہوتا ہے‘ جیسے انکا ای۔ میل پتہ، آخری معلوم پتہ‘ وغیرہ۔

*پرائیویسی ایکٹ  (PL-93-579)کانگریس نے 1947 میں منظور کیا تھا‘ جسکے تحت قونصلر افسر کو کسی بھی شخص کی معلومات بغیر اس کی تحریری اجازت کے کسی دوسرے شخص کو دینے کی ممانعت ہے۔

سوالات؟
ای۔ میل: acsnd@state.gov